Best moral story – The parrot and pigeon

Read best moral story the parrot and pigeon. Aj ki story boht amazing hai. Iss story ko prhne k bad ap kafi kuch naya sikhn gy aur boht sy achy lesson bi mely gy.Taleem aik qeemti cheez hai. Isay hasil karne ki koshish karni chahiye. Humein hamesha nai cheezon ko seekhne ki koshish karni chahiye. Humein ek doosre ki madad karni chahiye.https://urdughar.pk/amazing-story-in-urdu-2/.

طوطا اور کبوتر

ایک دفعہ ایک جنگل میں طوطا اور کبوتر رہتے تھے۔ طوطا بہت ہی باتونی اور کبوتر بہت ہی خاموش تھا۔ طوطا کبوتر سے اکثر کہتا تھا کہ “تم خاموش کیوں رہتے ہو؟ بات کیوں نہیں کرتےہو؟”

کبوتر کہتا تھا “میں خاموش رہتا ہوں کیونکہ میں بات کرنے سے کچھ سیکھتا نہیں ہوں۔ میں اپنی زبان صرف اپنے گھر والوں سے بات کرنے کے لیے استعمال کرتا ہوں۔”

طوطا کہتا تھا “میں بات کرکے بہت سی چیزوں سیکھتا ہوں۔ میں دنیا کے بارے میں جانتا ہوں۔ میں دوسرے جانوروں سے بات کرتا ہوں میں اپنی صلاحیتوں کو بہتر بناتا ہوں۔”

کبوتر کہتا تھا “میں بھی دنیا کے بارے میں جاننا چاہتا ہوں، لیکن میں نہیں جانتا کہ بات کرنا کیسے سیکھوں؟”طوطا کہتا تھا “میں تمہیں سکھا سکتا ہوں۔”

طوطے نے کبوتر کو بات کرنے کی مشق کرائی۔ کبوتر نے طوطے کی باتوں کو غور سے سنا اور سمجھا۔ اس نے بات کرنے کی مشق کرنا شروع کی۔

کچھ دنوں بعد، کبوتر بات کرنے لگا۔ وہ طوطے کی طرح جلدی سے تو نہیں بول سکتا تھا، لیکن وہ بول سکتا تھا۔طوطا کبوتر سے بہت خوش ہوا۔ اس نے کبوتر کو مبارکباد دی۔

کبوتر نے طوطے سے کہا “میں تمہارا بہت مشکور ہوں۔ تم نے مجھے بات کرنا سکھا دیا ہے۔ اب میں بھی دنیا کے بارے میں جان سکتا ہوں۔”طوطے اور کبوتر کی دوستی ہمیشہ کے لیے قائم رہی۔ وہ ایک دوسرے کے لیے اچھے دوست تھے۔

 سبق

تعلیم ایک قیمتی چیز ہے۔ اسے حاصل کرنے کی کوشش کرنی چاہیے۔ہمیں ہمیشہ نئی چیزوں کو سیکھنے کی کوشش کرنی چاہیے۔ہمیں ایک دوسرے کی مدد کرنی چاہیے۔

Read best moral story:

One Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *