Dear kids,Read the girl with the red hat urdu story. I hope that this story brings some excitement to your day, and I really believe you’ll enjoy it! Give it a read and don’t forget to share it with your friends. Your feedback means a lot to me. The girl with the red hat urdu story is amazing story. So,Happy reading! 📚✨

سرخ ٹوپی والی لڑکی

ایک دفعہ کا ذکر ہے کہ ایک چھوٹی سی سرخ ٹوپی والی لڑکی تھی۔ وہ اپنی ماں کے ساتھ جنگل کے کنارے ایک چھوٹے سے گاؤں میں رہتی تھی۔ ایک دن، اس کی ماں نے اسے اپنی دادی کے پاس ایک ٹوکری کھانا لے جانے کے لیے بھیجا، جو جنگل کے دوسری طرف رہتی تھی۔ اپنی ماں کی ہدایات پر عمل کرتے ہوئے، لڑکی نے سیدھا جنگل کے راستے پر جانے کا فیصلہ کیا۔

جیسا کہ وہ چل رہی تھی، اس کا سامنا ایک بڑے بھیڑیے سے ہوا۔ بھیڑیے نے لڑکی کو دیکھا اور اسے کھانے کا فیصلہ کیا۔ اس نے اس سے پوچھا کہ وہ کہاں جا رہی ہے۔ لڑکی نے معصومیت سے جواب دیا کہ وہ اپنی دادی کے پاس کھانا لے جا رہی ہے جو جنگل میں رہتی ہے۔ بھیڑیے نے اسے دادی کے گھر کا راستہ پوچھا۔ پھر اس نے ایک منصوبہ بنایا۔

بھیڑیہ لڑکی سے آگے بڑھا اور دادی کے گھر گیا۔ اس نے دروازے پر دستک دی اور ایک بھاری آواز میں کہا، “یہ میں ہوں، تمہاری پوتی!” دادی نے جواب دیا، “اندر آؤ، میری پیاری!” بھیڑیے نے دروازہ کھولا اور اندر چلا گیا۔ اس نے دادی کو بستر پر دیکھا اور اسے کھا لیا۔ پھر اس نے دادی کے کپڑے پہنے اور بستر پر لیٹ گیا۔

Read more urdu story here:

بھیڑیےکی چالاکی

جلد ہی، لڑکی پہنچ گئی۔ اس نے دروازے پر دستک دی اور کہا، “یہ میں ہوں، دادی!” بھیڑیے نے اپنی نازک آواز میں جواب دیا، “اندر آؤ، میرے بچے!” لڑکی اندر داخل ہوئی اور بستر پر گئی۔ اس نے کہا، “دادی، تم آج بہت عجیب لگ رہی ہو!” بھیڑیے نے کہا، “اوہ، یہ صرف اس لیے ہے کہ میں بیمار محسوس کر رہی ہوں۔”

لڑکی بستر کے قریب گئی۔ اس نے دیکھا کہ اس کی دادی کے کان بہت بڑے ہیں۔ اس نے کہا، “دادی، تمہارے کان بہت بڑے ہیں!” بھیڑیے نے کہا، “یہ تمہیں بہتر سننے کے لیے ہیں۔”

لڑکی نے کہا، “دادی، تمہاری آنکھیں بہت بڑی ہیں!” بھیڑیے نے کہا، “یہ تمہیں بہتر دیکھنے کے لیے ہیں۔”لڑکی نے کہا، “دادی، تمہارے دانت بہت بڑے ہیں!” بھیڑیے نے کہا، “یہ تمہیں کھانے کے لیے ہیں۔”

اور اس کے ساتھ ہی، بھیڑیے نے بستر سے چھلانگ لگائی اور لڑکی کو کھانے کی کوشش کی۔ لڑکی چیخی اور کھڑکی سے باہر کود گئی۔ وہ بھاگتی رہی اور بھاگتی رہی جب تک کہ وہ ایک لکڑہارے سے نہیں ملی۔

لکڑہارے نے ساری کہانی سنی۔ وہ لڑکی کے ساتھ دادی کے گھر گیا۔ انہوں نے بھیڑیے کو بستر پر دیکھا۔ لکڑہارے نے ایک بڑا ڈنڈا اٹھایا اور اسے بھیڑیے پر مارا۔ بھیڑیہ مر گیا بھیڑیےکے مرتے ہی دادی اس کے پیٹ سے بالکل ٹھیک باہر نکل آئی، وہ دونوں دادای کو دیکھ کر بہت خوش ہوئے۔اور دادای ان وہ لڑکی دیکھ کر بہت خوش ہوئی۔

سبق

اجنبیوں سے بات نہ کریں۔ہمیشہ اپنے والدین یا سرپرستوں کی ہدایات پر عمل کریں۔اگر آپ کبھی خطرے میں ہیں تو مدد کے لیے چیخیں یا کسی قابل اعتماد شخص سے رابطہ کریں۔

Leave a Comment